Muyasar Aaj Sarokar Se Ziada Hai

میسر آج سروکار سے زیادہ ہے

میسر آج سروکار سے زیادہ ہے

دیے کی روشنی مقدار سے زیادہ ہے

یہ جھانک لیتی ہے اندر سے آرزو خانہ

ہوا کا قد مری دیوار سے زیادہ ہے

گھٹن سے ڈرتے میں شہر ہوا میں آیا تھا

مگر یہ تازگی درکار سے زیادہ ہے

یونہی میں آنکھ سے باہر نکل کے دیکھتا ہوں

مرا قدم مری رفتار سے زیادہ ہے

میں روز گھر کی خموشی میں اس کو سنتا ہوں

جو شور رونق بازار سے زیادہ ہے

میں متقی ہوں مگر حوصلہ گناہوں کا

مرے بدن میں گنہ گار سے زیادہ ہے

قاسم یعقوب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(518) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Qasim Yaqub, Muyasar Aaj Sarokar Se Ziada Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 27 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Qasim Yaqub.