Zameen Din Raat Jaal Rahi Hai

زمین دن رات جل رہی ہے

زمین دن رات جل رہی ہے

تبھی تو شعلے اگل رہی ہے

کلام کرتے ہیں لوگ خود سے

بھڑاس دل کی نکل رہی ہے

ابھی سے کیا فیصلہ کروں میں

ابھی تو دنیا بدل رہی ہے

قدم بڑھانے کا ہے نتیجہ

کہ برف اب کچھ پگھل رہی ہے

وہاں تو موسم ہے بارشوں کا

ندی یہاں کیوں ابل رہی ہے

تم اپنا شوشہ اٹھائے رکھو

مری طبیعت بہل رہی ہے

جگی ہے کوئی تو آس مجھ میں

جو نیند خوابوں میں ڈھل رہی ہے

ہٹا جو ملبہ تو میں نے جانا

ابھی مری سانس چل رہی ہے

نفس نفس جی رہا ہوں راحتؔ

گڑھی گڑھی موت ٹل رہی ہے

راحت حسن

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(586) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rahat Hasan, Zameen Din Raat Jaal Rahi Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rahat Hasan.