Zindagi Dar Se Utar Hamain

زندگی دار سے اتار ہمیں

زندگی دار سے اتار ہمیں

ڈھونڈتے پھر رہے ہیں یار ہمیں

آبلے اب نہیں ہیں خار ہمیں

دیکھ حیرت سے مرغزار ہمیں

چھپ گئے تھےخزاں کے پہلو میں

ڈھونڈنے آئی جب بہار ہمیں

ہم تری دسترس سے باہر ہیں

آئینے دیکھ، مت پکار ہمیں

پھر نہ جینے کی آرزو اٹھے

زندگی ایسی موت مار ہمیں

آتشِ شوق کیا دکھاتی ہے

جو دکھاتی ہے چشمِ یار ہمیں

اک سہولت کی سانس لینے کو

مرنا پڑتا ہے بار بار ہمیں

اس سے کہہ دو کہ یاد آئے اب

اس سے کہ دو ہے اب قرار ہمیں

مے سے کچھ واسطہ نہیں لیکن

تم سے ہے نسبتِ خمار ہمیں

خار بھی پھول کی طرح مہکیں

راس آئے اگر بہار ہمیں

بات کچھ بن نہیں رہی صاحب

آپ اور آپ سے قرار ہمیں؟

کیا بنا کر ہمیں تو بھول گیا؟

دیکھتا بھی ہے کردگار ہمیں؟

پھونک مٹی میں عشق کی گرمی

اور پھر کر دے بے شمار ہمیں

تیری آواز اپنی ہو محسوس

اس تسلسل سے تو پکار ہمیں

تیرے گیسو نہیں جو سنورے گے

کون کہتا ہے تو سنوار ہمیں

میں بھی چیخیں تری ذرا سن لوں

سینہ ء درد سے گذار ہمیں

تجھ کو بے اختیار کرنا ہے

زندگی! ہے کیا اختیار ہمیں؟

آبلے ہیں سفر پہ آمادہ

روک لیتی ہے راہ گذار ہمیں

ذرے ذرے میں شکل ابھرے گی

دیکھ لے کر کے بے شمار ہمیں

نہ تری آنکھ میں نشہ ساقی

نہ ہی اب خواہشِ خمار ہمیں

ہم تری آنکھ کے نہیں قابل

مسندِ چشم سے اتار ہمیں

باغباں نے تو معذرت کر لی

تو کھلا دے، اے گل عذار ہمیں

آئینے سے گذر کے آئے ہیں

عکس تلوار سے گذار ہمیں

تم کو خود سے نہیں محبت جب

کیسے آئے گا تم پہ پیار ہمیں

شائستہ سحر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1117) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shaista Sehar, Zindagi Dar Se Utar Hamain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 55 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shaista Sehar.