Shab E Shikast

شبِ شکست

بارہویں مرتبہ

موت کا خواب تکمیل تک آتے آتے کہیں رہ گیا ہے

مجھے کوئی زخموں کے ٹانکے لگانا سکھا دے

تو مَیں اپنا چمڑا اُسے دان کر دوں گا

پھر چاہے وہ اس کے جوتے بنائے

یا اپنی بلاؤں کا صدقہ اتارے

اگر دیوتاؤں میں جھگڑا ہوا اور تم اس زمیں پر

کسی ان سنے قہقہے کے شکم سے برآمد ہوئے

تو میں اپنی پوروں پہ اگتی ہوئی رات سے تم میں اتنی اُداسی بھروں گا

کہ تم چیختے چیختے ایک دم ہست ہونے لگو گے

لپٹ جاؤ گے ، مجھ میں پیوست ہونے لگو گے

مگر مَیں ابھی تیرہواں خواب آنکھوں میں پیوست کرنے لگا ہوں

اُسامہ خالد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(387) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Usama Khalid, Shab E Shikast in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 17 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Usama Khalid.