Na Aaya Tars AAzmane Se Pehley

نہ آیا ترس آزمانے سے پہلے

نہ آیا ترس آزمانے سے پہلے

ذرا بھی نہ سوچا بھلانے سے پہلے

جو اشکوں کے گرنے سے ڈرتی تھی بے حد

اسے تھامتے تم رلانے سے پہلے

تڑپ اس کے اندر تھی بدلے کی لیکن

نہایت وہ روئی رلانے سے پہلے

مرے قلب تیری خطائیں ہیں ساری

ذرا فکر کرتا بھلانے سے پہلے

بہت ہی کٹھن راستہ ہے وفا کا

ذرا سوچتے دل لگانے سے پہلے

یقیناً ہی سو بار سوچے گا پہلے

صنم فون میرا اٹھانے سے پہلے

خیال اپنے اشکوں کا رکھنا تھا تم کو

خیالی فسانہ سنانے سے پہلے

یہ پہلے نہ سوچا کیا حشر ہو گا

کسی میں محبت جگانے سے پہلے

ابھی تھام دامن وہ مہتاب جا کر

تو بِگڑے ہوئے اس زمانے سے پہلے

ایم بی مہتاب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(608) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Mb Mehtaab, Na Aaya Tars AAzmane Se Pehley in Urdu. Also there are 1 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mb Mehtaab.