Taza Kissi Zameen Tamana Ki Dhun Liye

تازہ کسی زمینِ تمنا کی دھُن لئے

تازہ کسی زمینِ تمنا کی دھُن لئے

میرے قلم نے کچھ نئے اشعار بُن لئے

جب بھی ذرا اُداس ہوا اپنا دِل کبھی

چڑیوں کے گیت ، ساز درختوں کے سُن لئے

جاگی کبھی جو دل میں کسی خیر کی کسک

کانٹے کسی کی راہ کے پلکوں سے چُن لئے

آنکھیں بجھی بجھی سی ہیں چہرے تھکے تھکے

جیسے کہ لوگ پھرتےہوں روحوں میں گھُن لئے

رہتی ہے محوِ رقص مرے دل کے آس پاس

اِک آرزو لبوں پہ گزشتہ کے گُن لئے

یہ کیا ہوا کہ اپنے تعاقب میں چل پڑا

نکلا تھا گھر سے میں تو کوئی اور دُھن لئے

اُتری ذرا جو دھوپ تو یہ حوصلہ ہوا

پتے اُٹھا کے خاک سے اشجار بُن لئے

وسیم عباس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(566) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Waseem Abbas, Taza Kissi Zameen Tamana Ki Dhun Liye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 37 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Waseem Abbas.