بند کریں
شاعری امجد اسلام امجداتنے خواب کہاں رکھوں گا

عمر بھر کی کمائی

-

Umer bhar ki kammai


(275) ووٹ وصول ہوئے