بند کریں
شاعری اعجاز ثاقب

میں کب تلک یونہی اب خود کو در بدر دیکھوں

-

main kab talak yunhi abb khud ko darbadar dekhoon


(81) ووٹ وصول ہوئے