بند کریں
شاعری فرحت عباس شاہ

یہی نہیں ہے کہ آنسو سمیٹ لایا ہوں

-

Yehi nehin hai key


(279) ووٹ وصول ہوئے