بند کریں
شاعری حرارانایوں شام ڈھلے تم بھی تو گھر آؤ کسی دن

(262) ووٹ وصول ہوئے