بند کریں
شاعری خواجہ غلام فریدنہ کوئی سنگتی نہ کوئی ساتھی

(441) ووٹ وصول ہوئے