بند کریں
شاعری محبوب صابر

لب پہ مسکان نہ چہرہ تھا جواں میرے بعد

-

lab pey muskaan na chehra jawan mere baad


(137) ووٹ وصول ہوئے