بند کریں
شاعری محمد اظہار الحق

بریدہ گیسووں میں آنکھ کا رستہ نہیں تھا

-

bareda gesoon main ankh ka rasta nahi tha


(240) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان