بند کریں
شاعری ناصر کاظمییاد آتا ہے روز و شب کوئی

(818) ووٹ وصول ہوئے