بند کریں
شاعری قمر رضا شہزاد

لہو میں جیسے رواں آفتاب ہوتا ہے

-

lahu main jaise ravaaN aftaab hota hai


(331) ووٹ وصول ہوئے