بند کریں
شاعری ذوالفقار عادل

تجھ سے جڑا ہوا ہوں میں، پھر بھی جدا سمجھ مجھے

-

Tujh se jura huwa hun main, phir bhi juda samajh mujhay


(34) ووٹ وصول ہوئے