Khawab Mein Aao Marey Rangeen Khowaboon Ki Terhan

خواب میں آؤ مرے رنگین خوابوں کی طرح

خواب میں آؤ مرے رنگین خوابوں کی طرح

پڑھ سکوں تم کو میں رومانی کتابوں کی طرح

دیجیے تشبیہ کیا ان کو مہ و خورشید سے

ایک چہرہ ان کا ہے سو آفتابوں کی طرح

چاہے گر انساں تو بن سکتی ہے لا فانی حیات

زندگی انسان کی گو ہے حبابوں کی طرح

جیسے مفہوم و معانی سے ہوں عاری سارے ہی

پڑھتا ہوں اک ایک چہرے کو کتابوں کی طرح

تشنگی سب کی بجھائیں بحر بے پایاں بنیں

بن کے دنیا میں رہیں ہم کیوں سرابوں کی طرح

آسی رام نگری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(588) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of AASI RAMNAGRI, Khawab Mein Aao Marey Rangeen Khowaboon Ki Terhan in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of AASI RAMNAGRI.