Janib Dar Dekhna Acha Nahi

جانب در دیکھنا اچھا نہیں

جانب در دیکھنا اچھا نہیں

راہ شب بھر دیکھنا اچھا نہیں

عاشقی کی سوچنا تو ٹھیک ہے

عاشقی کر دیکھنا اچھا نہیں

اذن جلوہ ہے جھلک بھر کے لیے

آنکھ بھر کر دیکھنا اچھا نہیں

اک طلسمی شہر ہے یہ زندگی

پیچھے مڑ کر دیکھنا اچھا نہیں

اپنے باہر دیکھ کر ہنس بول لیں

اپنے اندر دیکھنا اچھا نہیں

پھر نئی ہجرت کوئی درپیش ہے

خواب میں گھر دیکھنا اچھا نہیں

سر بدن پر دیکھیے جاویدؔ جی

ہاتھ میں سر دیکھنا اچھا نہیں

عبداللہ جاوید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1098) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abdullah Javed, Janib Dar Dekhna Acha Nahi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abdullah Javed.