Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya

آگے وہ جا بھی چکے لطف نظارہ بھی گیا

آگے وہ جا بھی چکے لطف نظارہ بھی گیا

چشم غفلت نہ کھلی صبح کا تارا بھی گیا

سرد مہری سے تری گرمئ الفت نہ رہی

دل میں اٹھتا تھا جو ہر دم وہ شرارہ بھی گیا

دل کے آئینے میں جب آپ کی صورت دیکھی

جس کو دھوکا میں سمجھتا تھا وہ دھوکا بھی گیا

عشق کو تاب تجلی نہیں کیا دیکھے گا

حسن یہ جان کے پردوں کو اٹھاتا بھی گیا

کس نے پائی ہے غم یار محبت سے نجات

عشق کا بوجھ کہیں سر سے اتارا بھی گیا

تیرے قدموں پہ جو لذت ہے وہ حاصل نہ ہوئی

یوں تو سجدے میں سر عجز جھکایا بھی گیا

دل کی آشفتہ مزاجی میں نہ کچھ فرق آیا

بارہا زلف پریشاں کو سنوارا بھی گیا

مانگنے سے کہیں یہ چیز ملا کرتی ہے

دل چرانے ہی کے قابل تھا چرایا بھی گیا

بے خودی تجھ پہ تصدق ہوں مرے ہوش و حواس

سامنے ہوتے ہوئے ان کو پکارا بھی گیا

ایک ہی چیز ہے پردے میں کہ بیرون حجاب

مجھ کو ظاہر بھی کیا خود کو چھپایا بھی گیا

پھر بھی آنکھیں رہیں محروم تماشائے جمال

ان کی تصویر کو شیشے میں اتارا بھی گیا

چھوڑ کر مجھ کو بھنور میں نہ خبر لی میری

اک سہارا تھا تمہارا وہ سہارا بھی گیا

پائے محبوب پہ سر رکھ کے ہوئے ہم واصلؔ

زندگی پائی نئی موت کا دھڑکا بھی گیا

دل کے آئینے میں نادیدہ تجلی دیکھی

خود نمائی کا بھلا ہو کہ وہ پردا بھی گیا

ابو محمد واصل بہرائچی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(314) ووٹ وصول ہوئے

Related Poetry

Your Thoughts and Comments

Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya by Abu Mohammad Wasil Bahraichi - Read Abu Mohammad Wasil Bahraichi's best Shayari Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya at UrduPoint. Here you can read the best poetry Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya of Abu Mohammad Wasil Bahraichi. Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya is the most famous poetry by Abu Mohammad Wasil Bahraichi. People love to read poetry by Abu Mohammad Wasil Bahraichi, and Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya by Abu Mohammad Wasil Bahraichi is best among the whole collection of poetry by Abu Mohammad Wasil Bahraichi.

Abu Mohammad Wasil Bahraichi is the most famous Urdu Poet. Therefore, people love to read Urdu Poetry of Abu Mohammad Wasil Bahraichi. At UrduPoint, you can find the complete collection of Urdu Poetry of Abu Mohammad Wasil Bahraichi. On this page, you can read Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya by Abu Mohammad Wasil Bahraichi. Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya is the best poetry by Abu Mohammad Wasil Bahraichi.

Read the Abu Mohammad Wasil Bahraichi's best poetry Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya here at UrduPoint; you will surely like it. If we make a list of Abu Mohammad Wasil Bahraichi's best Shayari, Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya of Abu Mohammad Wasil Bahraichi will be at the top. Many people, who love the Urdu Shayari of Abu Mohammad Wasil Bahraichi, regard it as the best poetry Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya of Abu Mohammad Wasil Bahraichi.

We recommend you read the most famous poetry, Aage Wo Ja Bhi Chuke Lutf-e-nazara Bhi Gaya of Abu Mohammad Wasil Bahraichi here, you will surely love it. Also, don't forget to share it with others.