Be Basi Aisi Bhi Hoti Hai Bhala

بے بسی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

بے بسی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

زندگی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

روشنی اب میرے اشکوں سے ہے بس

تیرگی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

ہنستے ہنستے ہو گیا برباد میں

خوش دلی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

چیختا رہتا ہوں اکثر بے سبب

بیکسی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

جی رہا ہوں میں اسے دیکھے بغیر

بے حسی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

پوچھتے ہو عیب اوروں سے مرے

دوستی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

زندگی ایسی ہی ہوتی ہے بھئی

زندگی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

رنگ ہی چہرے پہ لہراتے ہیں اب

جاں کنی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

ہیں لہو کی بوندیں اب میری سپاہ

سرکشی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

ایک ہی صورت یہاں چاروں طرف

روشنی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

گال جھلسے جا رہے ہیں کیوں مرے

چاندنی ایسی بھی ہوتی ہے بھلا

احمد عطا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1002) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmed Atta, Be Basi Aisi Bhi Hoti Hai Bhala in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmed Atta.