New Zealand Ka Saneha

نیوزی لینڈ کا سانحہ

یہ کیسا ظلم ہوا نیوزی لینڈ میں برپا

گَھٹی یہ کیسی وہاں وارداتِ روح فرسا

نمازیوں نے شہادت کا جام نوش کیا

جو باوضو تھے اُنہیں رب نے سرفروش کیا

شجاع لوگوں نے بہتوں کی جاں بچائی ہے

متاعِ ہمت و جرأت خدا سے پائی ہے

اِمامِ مسجدِ اَلنوُّر اِن میں شامل تھے

عمومی قتل میں عبدالعزیز حائل تھے

یہ قتل و خون مجھے اشکبار کرتا ہے

ہے ایسا شدّتِ غم ، بے قرارکرتا ہے

خدا کا شکر کہ قاتل نہ تھا کوئی مسلم

بساطِ کفر ہوئی شرمسار اور نادِم

یہودیوں نے بھی اِظہارِ تعزیت کی ہے

عیسائیوں نے بھی شہداء کی منزلت کی ہے

”کِویز“غم کی گھڑی میں کھڑے ہیں ساتھ اِن کے

خلاف ظلم کے یہ بھی اڑے ہیں ساتھ اِن کے

ہر ایک قوم نے مظلوم کی حمایت کی

پسند آئے گی رب کو یہ طرزِیکجہتی

بہت شنیع عمل تھا وہ ، ایک حیواں کا

وہ رُوپ دھار کے آیا تھا ایک انساں کا

ہلا کے رکھ دیا ظالم نے سارے عالم کو

جھکایا اُس نے تو اِنسانیت کے پرچم کو

یہ قتلِ عام نہیں اسلحہ کی دوڑ ہے یہ

پناہ کے لئے دہشت زدہ کی دوڑ ہے یہ

قریب آئی ہے کیا جنگ ناگزیر کوئی!

زمین ہے یا یہ بارُود کا ہے ڈھیر کوئی!

ہیں کون لوگ یہ! اور کس کی ذہن سازی ہے!

ہر ایک شر کی ہدَف ملتِ حجازی ہے

پنپ رہا ہے یہ سینوں میں کیسا بغض و حسد!

برائے قومِ مسلماں کھدی ہوئی ہے لحد

حیات امن پسندوں کی اب اجیرن ہے

رعایا کے لئے ہر حکمران رہزن ہے

ہر ایک ملک میں اندوہ ناک ہیں حالات

ہیں زد پہ لُوٹ کے اب زیست کے اثاثہ جات

خموشی کیوں ہے یہ انسانیت پسندوں کی

لُٹی کیوں ! قوتِ گویائی نیک بندوں کی

خدا کرے کہ زمیں امن کا ہو گہوارہ

جہاں میں جاری کیا جائے پیار کا دھارا

عزیز اُمتِ مرحوم کا ہے عزمِ صمیم

رضائے رب کو دھڑکتا رہے گا قلبِ سلیم

عزیز بلگامی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1425) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Azeez Belgaumi, New Zealand Ka Saneha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 2 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Azeez Belgaumi.