Acha Tumahray Shehar Ka Dastoor Ho Gaya

اچھا تمہارے شہر کا دستور ہو گیا

اچھا تمہارے شہر کا دستور ہو گیا

جس کو گلے لگا لیا وہ دور ہو گیا

کاغذ میں دب کے مر گئے کیڑے کتاب کے

دیوانہ بے پڑھے لکھے مشہور ہو گیا

محلوں میں ہم نے کتنے ستارے سجا دیئے

لیکن زمیں سے چاند بہت دور ہو گیا

تنہائیوں نے توڑ دی ہم دونوں کی انا!

آئینہ بات کرنے پہ مجبور ہو گیا

دادی سے کہنا اس کی کہانی سنائیے

جو بادشاہ عشق میں مزدور ہو گیا

صبح وصال پوچھ رہی ہے عجب سوال

وہ پاس آ گیا کہ بہت دور ہو گیا

کچھ پھل ضرور آئیں گے روٹی کے پیڑ میں

جس دن مرا مطالبہ منظور ہو گیا

بشیر بدر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1870) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Bashir Badr, Acha Tumahray Shehar Ka Dastoor Ho Gaya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love Urdu Poetry. Also there are 75 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Bashir Badr.