Tum Ho Shareek E Gham Tu Mujhay Koi Gham NahiN

تم ہو شریک غم تو مجھے کوئی غم نہیں

تم ہو شریک غم تو مجھے کوئی غم نہیں

دنیا بھی مرے واسطے جنت سے کم نہیں

چاہا ہے تجھ کو تجھ پہ لٹائی ہے زندگی

تیرے علاوہ کچھ مرا دین و دھرم نہیں

وہ بد نصیب راحت ہستی نہ پا سکا

جس پہ مرے حبیب کی چشم کرم نہیں

میں بندۂ صنم سہی کافر سہی مگر

پائے مرا مقام کسی میں یہ دم نہیں

اس راستے میں سر کو جھکانا حرام ہے

جس راستے میں آپ کا نقش قدم نہیں

اے آنے والے اپنی جبیں کو جھکا کر آ

یہ آستان یار ہے کوئے حرم نہیں

اہل جنوں کا اس لئے مشرب جدا رہا

واقف نیاز عشق سے شیخ حرم نہیں

منکر رہ وفا میں فناؔ کس طرح سے ہو

میرا جہاں میں کوئی وجود و عدم نہیں

فنا بلند شہری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1218) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fana Bulandshehri, Tum Ho Shareek E Gham Tu Mujhay Koi Gham NahiN in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Social Urdu Poetry. Also there are 37 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fana Bulandshehri.