Poetry of Farah Iqbal, Urdu Shayari of Farah Iqbal

فرح اقبال کی شاعری

کہیں ہم کیا کسی سے دل کی ویرانی نہیں جاتی

Kahen Hum Kia Kisi Se Dil Ki Weerani Nahin Jati

(Farah Iqbal) فرح اقبال

شکایت ہم نہیں کرتے رعایت وہ نہیں کرتے

Shikayat Hum Nahin Kartay Reaayat Woh Nahin Kartay

(Farah Iqbal) فرح اقبال

سارے منظر دل کش تھے ہر بات سہانی لگتی تھی

Saray Manzar Dilkash Thay Har Baat Sohani Lagti Thi

(Farah Iqbal) فرح اقبال

زندگی چپکے سے اک بات کہا کرتی ہے

Zindagi Chupkay Se Ik Baat Kaha Karti Hae

(Farah Iqbal) فرح اقبال

زمانہ جھک گیا ہوتا اگر لہجہ بدل لیتے

Zamana Jhuk Gaya Hota Agr Lehja Badal Letay

(Farah Iqbal) فرح اقبال

راکھ اڑتی ہوئی بالوں میں نظر آتی ہے

Raakh Orti Hoi Balon Mein Nazar Aati Hae

(Farah Iqbal) فرح اقبال

ذرا سی رات ڈھل جائے تو شاید نیند آ جائے

Zara Sei Raat Dhal Jaey Tu Shayad Neend Aa Jaey

(Farah Iqbal) فرح اقبال

ایک مدت سے یہاں ٹھہرا ہوا پانی ہے

Aik Muddat Se Yahan Thehra Hoa Pani Hae

(Farah Iqbal) فرح اقبال

مدتوں ہم سے ملاقات نہیں کرتے ہیں

Moddaton Hum Se Molaqat Nahin Kartay Hain

(Farah Iqbal) فرح اقبال

کیسے منظر ہیں جو ادراک میں آ جاتے ہیں

Kaesay Manzar Hain Jo Idrak Mein Aa Jatay Hain

(Farah Iqbal) فرح اقبال

کبھی تم بھیگنے آنا مری آنکھوں کے موسم میں

Kabhi Tum Bheegnay Aana Meri Ankhon Kay Maosam Mein

(Farah Iqbal) فرح اقبال

خود ہی دیا جلاتی ہوں

Khud Hi Diya Jalati Hun

(Farah Iqbal) فرح اقبال

درد کا سمندر ہے صرف پار ہونے تک

Dard Ka Samandar Hae Sirf Paar Honay Tak

(Farah Iqbal) فرح اقبال

کہیں یقیں سے نہ ہو جائیں ہم گماں کی طرح

Kaheen Yaqeen Se Na Ho Jaen Hum Guman Ki Tarha

(Farah Iqbal) فرح اقبال

وہ میرے بارے میں ایسے بھی سوچتا کب تھا

Woh Meray Baray Mein Aesay Bhi Sochta Kab Tha

(Farah Iqbal) فرح اقبال

ہمیں تو ساتھ چلنے کا ہنر اب تک نہیں آیا

Hamen Tu Sath Chalnay Ka Hunar Ab Tak Nahin Aaya

(Farah Iqbal) فرح اقبال

مرے ہم رقص سائے کو بالآخر یونہی ڈھلنا تھا

Meray Hum Raqs Saey Ko Bail Aakhir Yun Hi Dhalna Tha

(Farah Iqbal) فرح اقبال

محبت کا دیا ایسے بجھا تھا

Mohabbat Ka Diya Aesay Bujha Tha

(Farah Iqbal) فرح اقبال

کوئی جب مل کے مسکرایا تھا

Koi Jab Mil Kay Muskraya Tha

(Farah Iqbal) فرح اقبال

دیکھا پلٹ کے جب بھی تو پھیلا غبار تھا

Dekha Palat Kay Jab Bhi Tu Phela Ghubar Tha

(Farah Iqbal) فرح اقبال

Urdu Poetry & Shayari of Farah Iqbal. Read Ghazals, Sad Poetry, Social Poetry of Farah Iqbal, Ghazals, Sad Poetry, Social Poetry and much more. There is 1 book of the poet published on UrduPoint, including Koi Bhi Rut Ho by Farah Iqbal. Read poetry from the books. There are total 20 Urdu Poetry collection of Farah Iqbal published online.