Dekh Nah Is Terhan Guzaar Arsa Chasham Se Mujhe

دیکھ نہ اس طرح گزار عرصۂ چشم سے مجھے

دیکھ نہ اس طرح گزار عرصۂ چشم سے مجھے

فرصت دید ہو نہ ہو مہلت خواب دے مجھے

بسکہ گزشتنی ہے وقت بسکہ شکستنی ہے دل

خواب کوئی دکھا کہ جو یاد نہ آ سکے مجھے

خام ہی رکھ کے پختگی شکل ہے اک شکست کی

آتش وصل کی جگہ خاک فراق دے مجھے

ہاں اے غبار آشنا میں بھی تھا ہم سفر ترا

پی گئیں منزلیں تجھے کھا گئے راستے مجھے

دیر سے رو نہیں سکا دور ہوں سو نہیں سکا

غم جو رلا سکے مجھے سم جو سلا سکے مجھے

ادریس بابر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(454) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Idris Babur, Dekh Nah Is Terhan Guzaar Arsa Chasham Se Mujhe in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 53 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Idris Babur.