Lage Hue Thay Sabhi Shoor Hi Machane Main

لگے ہوئے تھے سبھی شور ہی مچانے میں

لگے ہوئے تھے سبھی شور ہی مچانے میں

جبھی تو دیر لگی آگ کو بجھانے میں

وگرنہ مجھ سے کوئی کام ہی نہ ہو پائے

کچھ ایسی برکتیں ہیں تیرے مسکرانے میں

عجیب سائے سکونت کیے ہوئے تھے یہاں

بڑا سکون ملا ہے یہ گھر جلانے میں

بچا سکا نہ ترا عشق دکھ تو ہے لیکن

لگا ہوا ہوں میں اب نوکری بچانے میں

جو ہو سکے تو مرے ہجر میں اضافہ کر

کہ مجھ سے دیر ہوئی تجھ سے دل لگانے میں

بہا کے لے گیا دریا تمام بستی کو

مگر یہ لوگ رہے کشتیاں بنانے میں

مرے مکاں کے اندھیروں کو کون سمجھائے

خوشی ملی جو ہوا کو دیا بجھانے میں

جو نام ہم نے کمایا ہے عشق میں ساحرؔ

جناب قیس کو صدیاں لگیں کمانے میں

جہانزیب ساحر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(642) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jahanzeb Sahir, Lage Hue Thay Sabhi Shoor Hi Machane Main in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jahanzeb Sahir.