Taiz Hawa Or Shab Bhar Barish

تیز ہوا اور شب بھر بارش

تیز ہوا اور شب بھر بارش

اندر چپ اور باہر بارش

ایسے پہلے کب برسی تھیں

آنکھیں اور برابر بارش

صحرا تو پیاسے کا پیاسا

اور بھرے دریا پر بارش

اس سر تال کا اور مزا تھا

کچے گھر کی چھت پر بارش

جھوم رہے ہیں بھیگ رہے ہیں

پیڑ پرندے منظر بارش

میں نے بادل کو بھیجی تھی

اک کاغذ پر لکھ کر بارش

میرے اشکوں سے لکھے کو

وہ پڑھتا ہے اکثر بارش

کون یہ دیکھے دیدۂ پر نم

اک بارش کے اندر بارش

یاد بہت آتے ہیں جاناںؔ

ہاتھ میں ہاتھ اور سر پر بارش

جاناں ملک

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1055) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Janan Malik, Taiz Hawa Or Shab Bhar Barish in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 18 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Janan Malik.