Aay Koye Yaar Tairay Zmanay Guzar Gaye

اے کوئے یار تیرے زمانے گزر گئے

اے کوئے یار تیرے زمانے گزر گئے

جو اپنے گھر سے آئے تھے وہ اپنے گھر گئے

اب کون زخم و زہر سے رکھے گا سلسلہ

جینے کی اب ہوس ہے ہمیں ہم تو مر گئے

اب کیا کہوں کہ سارا محلہ ہے شرمسار

میں ہوں عذاب میں کہ مرے زخم بھر گئے

ہم نے بھی زندگی کو تماشا بنا دیا

اس سے گزر گئے کبھی خود سے گزر گئے

تھا رن بھی زندگی کا عجب طرفہ ماجرا

یعنی اٹھے تو پاؤں مگر جونؔ سر گئے

جون ایلیا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(4147) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jaun Elia, Aay Koye Yaar Tairay Zmanay Guzar Gaye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 195 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jaun Elia.