Woh Ghar TinkoN Se Banwaya Gaya Hae

وہ گھر تنکوں سے بنوایا گیا ہے

وہ گھر تنکوں سے بنوایا گیا ہے

وہاں ہر خواب دفنایا گیا ہے

مری الفت کو کیا سمجھے گا کوئی

سبق نفرت کا دہرایا گیا ہے

مرے اندر کا چہرہ مختلف ہے

بدن پر اور کچھ پایا گیا ہے

ہوئی ہے زندگی افتاد ایسے

ہوس میں ہر مزا پایا گیا ہے

کہی ایسی ہے عنبر اس کی ہر بات

شکستہ دل کو تڑپایا گیا ہے

نادیہ عنبر لودھی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1599) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Nadia Umber Lodhi, Woh Ghar TinkoN Se Banwaya Gaya Hae in Urdu. This famous Urdu Shayari is a , and the type of this Nazam is Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Nadia Umber Lodhi.