Name Wa Aankhon Se Tumhe Aksar Hai Dekha

نیم وا آنکھوں سے تُمہیں اکثر ہے دیکھا

نیم وا آنکھوں سے تُمہیں اکثر ہے دیکھا

جب بھی جاگتی آنکھوں سے خواب دیکھا

تمہاری باتوں کی خوشبو مہکتی ہوئی لگی

جب بھی کبھی آس پاس میں نے گلاب دیکھا

زیست کے ورق ورق پہ تھی داستان

تُم ہی تُم جب بھی پلٹ کے باب دیکھا

پُرانے وقتوں میں جھانکا ہے اکثر میں نے

کیا بتاوٴں اپنا اک نیا شباب دیکھا

لوگوں نے آنکھوں میں میری آنکھیں ڈالیں

حیرت میں پڑ گئے اور بولے آب دیکھا

یادوں میں بسر ہوئی ہے اپنی تو عمر

اکثر راتوں کو دل میں اک تاب دیکھا

بڑے ہی گناہ نکلے نیکیاں کم نکلیں

جب بھی زودو زیاں کا حساب دیکھا

نسرین منہاس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1101) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Nasreen Minhas, Name Wa Aankhon Se Tumhe Aksar Hai Dekha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 25 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Nasreen Minhas.