بند کریں
شاعری فراق گورکھپوری

یہ مانا زندگی ہے چار ہے دن کی

-

Yeh manna zindgi


(388) ووٹ وصول ہوئے