بند کریں
شاعری قمر رضا شہزاد

کوئی بلند بھی ہو میر تو نہیں ہوتا

-

koi buland bhi hoo meer tu nahi hotaT


(308) ووٹ وصول ہوئے