Main Agar Tujhe Hi Na Sochon To Mashghala Kya Hai, Urdu Ghazal By Qazi Zaheer Ahmad

Main Agar Tujhe Hi Na Sochon To Mashghala Kya Hai is a famous Urdu Ghazal written by a famous poet, Qazi Zaheer Ahmad. Main Agar Tujhe Hi Na Sochon To Mashghala Kya Hai comes under the Love category of Urdu Ghazal. You can read Main Agar Tujhe Hi Na Sochon To Mashghala Kya Hai on this page of UrduPoint.

میں گر تجھے ہی نہ سوچوں تو مشغلہ کیا ہے

قاضی ظہیر احمد

میں گر تجھے ہی نہ سوچوں تو مشغلہ کیا ہے

وگرنہ تیرے سوا میرا مسئلہ کیا ہے

جو لوگ حسبِ ضرورت ہی پیار کرتے ہیں

وہ مجھ سے پوچھتے پھرتے ہیں، ماجرا کیا ہے

بدن سے روح تلک جو کبھی نہ اترے ہوں

انہیں ہو کیسے خبر، اس میں ذائقہ کیا ہے

چلو صراحی اٹھائیں، گگن کے، پار چلیں

اگر نہیں، تو بتاؤ کہ مشورہ کیا ہے

چلو کہ پی لیں، کہیں چاند رات میں، جی لیں

وگرنہ دنیا میں، جینے کا فائدہ کیا ہے

ہر ایک مورچہ زن ہے کہ تجھ سا ہو احمد

نجانے کس کو خبر ہے کہ زائچہ کیا ہے

تمھارا نام سلامت ہے ہر حسیں لب پر

یہاں پہ تجھ کو امیری سے واسطہ کیا ہے

قاضی ظہیر احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1366) ووٹ وصول ہوئے

You can read Main Agar Tujhe Hi Na Sochon To Mashghala Kya Hai written by Qazi Zaheer Ahmad at UrduPoint. Main Agar Tujhe Hi Na Sochon To Mashghala Kya Hai is one of the masterpieces written by Qazi Zaheer Ahmad. You can also find the complete poetry collection of Qazi Zaheer Ahmad by clicking on the button 'Read Complete Poetry Collection of Qazi Zaheer Ahmad' above.

Main Agar Tujhe Hi Na Sochon To Mashghala Kya Hai is a widely read Urdu Ghazal. If you like Main Agar Tujhe Hi Na Sochon To Mashghala Kya Hai, you will also like to read other famous Urdu Ghazal.

You can also read Love Poetry, If you want to read more poems. We hope you will like the vast collection of poetry at UrduPoint; remember to share it with others.