Daur Tak Dasht Mein Ujala Hai

دور تک دشت میں اجالا ہے

دور تک دشت میں اجالا ہے

جانے کس قہر کا حوالہ ہے

پھر اگلنے لگی ہے آگ زمیں

پھر کوئی قتل ہونے والا ہے

شہر خوش بخت کا مکیں ہوں مگر

گرد میرے غموں کا ہالہ ہے

دل نے غم کا الاؤ لفظوں میں

کس مہارت سے آج ڈھالا ہے

جرم سرزد ہوا تھا آدم سے

مجھ کو جنت سے کیوں نکالا ہے

تیری اک آرزو نے لوگوں کو

کس قدر الجھنوں میں ڈالا ہے

اک سزا یافتۂ عشق نے آج

منصب عشق پھر سنبھالا ہے

پھر خیالؔ ستم زدہ میں کوئی

خوشبو انگیز مثل لالہ ہے

رفیق خیال

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(294) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rafique Khayal, Daur Tak Dasht Mein Ujala Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 41 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rafique Khayal.