Khawab Likhna Kabhi Khawahishoon K Nageen Chaan Kar Dekhna

خواب لکھنا کبھی خواہشوں کے نگیں چھان کر دیکھنا

خواب لکھنا کبھی خواہشوں کے نگیں چھان کر دیکھنا

آگیا عشق میں ہم کو تپتی زمیں چھان کر دیکھنا

اب کے سوچا ہے دل کی ہتھیلی کہیں اور کھولیں گے ہم

تیرے کوچے میں خاکِ مقدّر نہیں چھان کر دیکھنا

ماورائے سفر کا لکیروں کے جنگل سے کیا واسطہ

عشق والوں نے کیا راہِ دنیا و دیں چھان کر دیکھنا

الغرض ہر نفس تارِ بازار سے منسلک ہے یہاں

کارخانے ہیں سب، کیا مکان و مکیں چھان کر دیکھنا

مدّتوں سے شکستہ سہی کیمیا اور وفا سے مُکرتی نہیں

معجزے دیکھنے ہوں تو میری زمیں چھان کر دیکھنا

چل مرے قیس تُو شہرِ خوش رنگ میں خود کو رسوا نہ کر

کچھ ضوروی نہیں ہر سرابِ حسیں چھان کر دیکھنا

راکھ ہو کر سعیدؔ آخرش میرا سینہ منوّر ہوا

رنگ لایا مرا ریگ زارِ یقیں چھان کر دیکھنا

سعید خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1278) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Saeed Khan, Khawab Likhna Kabhi Khawahishoon K Nageen Chaan Kar Dekhna in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Saeed Khan.