Hajhoom Dard Mila Zindagi Azaab Hoi

ہجوم درد ملا زندگی عذاب ہوئی

ہجوم درد ملا زندگی عذاب ہوئی

دل و نگاہ کی سازش تھی کامیاب ہوئی

تمہاری ہجر نوازی پہ حرف آئے گا

ہماری مونس و ہمدم اگر شراب ہوئی

یہاں تو زخم کے پہرے بٹھائے تھے ہم نے

شمیم زلف یہاں کیسے باریاب ہوئی

ہمارے نام پہ گر انگلیاں اٹھیں تو کیا

تمہاری مدح و ستائش تو بے حساب ہوئی

ہزار پرسش غم کی مگر نہ اشک بہے

صبا نے ضبط یہ دیکھا تو لا جواب ہوئی

شہریار

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(310) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shahryar, Hajhoom Dard Mila Zindagi Azaab Hoi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 150 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shahryar.