Kar Ke Sana E Malik E Kausar Abhi Abhi, Urdu Ghazal By Syed Iqbal Rizvi Sharib

Kar Ke Sana E Malik E Kausar Abhi Abhi is a famous Urdu Ghazal written by a famous poet, Syed Iqbal Rizvi Sharib. Kar Ke Sana E Malik E Kausar Abhi Abhi comes under the Love, Islamic category of Urdu Ghazal. You can read Kar Ke Sana E Malik E Kausar Abhi Abhi on this page of UrduPoint.

کر کے ثنائے مالکِ کوثر ابھی ابھی

سید اقبال رضوی شارب

کر کے ثنائے مالکِ کوثر ابھی ابھی

حاصل کیا ہے خلد میں اک گھر ابھی ابھی

اوصافِ مرتضیٰ کو کتابِ خدا میں دیکھ

کھولا ہے بابِ مدحتِ حیدر ابھی ابھی

جبریل لے کے جاؤ ولایت کی آیتیں

دی ہے علیؑ نے اپنی انگشتر ابھی ابھی

بغضِ علیؑ میں تازہ ہے اس درجہ انکا زخم

ہارا ہو جیسے شام کا لشکر ابھی ابھی

نکلا درِ حسینؑ سے کہتا ہوا یہ حُرؒ

میں پا گیا ہوں دین کا محور ابھی ابھی

ازرق پہ فتح پائی تو قاسم کو یوں لگا

مارے ہوں جیسے مرحب و عنتر ابھی ابھی

دولھا بنا تھا یہ تو ابھی کل کی بات ہے

ٹکڑے ہوئے ہیں جس کے بہتّر ابھی ابھی

جھولے کو دیکھ بانو کو ہوتا تھا یہ گماں

آواز دے گا ننّھا سا اصغر ابھی ابھی

زینب یہ سوچتی تھیں کہ ہاں کہہ سکوں گی کیا

اذنِِ وغا کو آئے جو اکبر ابھی ابھی

ڈھارس تھی تشنگی کو کہ سیراب ہونگی میں

نکلا ہے شیرِ حیدرِ صفدر ابھی ابھی

شاربؔ لحد میں اپنے مقدّر پہ ناز کر

آئیں گے پاس ساقیِ کوثر ابھی ابھی

سید اقبال رضوی شارب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1602) ووٹ وصول ہوئے

You can read Kar Ke Sana E Malik E Kausar Abhi Abhi written by Syed Iqbal Rizvi Sharib at UrduPoint. Kar Ke Sana E Malik E Kausar Abhi Abhi is one of the masterpieces written by Syed Iqbal Rizvi Sharib. You can also find the complete poetry collection of Syed Iqbal Rizvi Sharib by clicking on the button 'Read Complete Poetry Collection of Syed Iqbal Rizvi Sharib' above.

Kar Ke Sana E Malik E Kausar Abhi Abhi is a widely read Urdu Ghazal. If you like Kar Ke Sana E Malik E Kausar Abhi Abhi, you will also like to read other famous Urdu Ghazal.

You can also read Love Poetry, If you want to read more poems. We hope you will like the vast collection of poetry at UrduPoint; remember to share it with others.