Toot Kar Ehad Tamana Ki Terhan

ٹوٹ کر عہد تمنا کی طرح

ٹوٹ کر عہد تمنا کی طرح

معتبر ہم رہے فردا کی طرح

شوق منزل تو بہت ہے لیکن

چلتے ہیں نقش کف پا کی طرح

جا ملیں گے کبھی گلزاروں سے

پھیلتے جائیں گے صحرا کی طرح

دیکھ کر حال پریشاں اپنا

ہم بھی ہنس لیتے ہیں دنیا کی طرح

کبھی پایاب کبھی طوفانی

ہم بھی ہیں دشت کے دریا کی طرح

محفل ناز میں رہئے لیکن

دیکھیے چشم تماشا کی طرح

اپنے دشمن سے ہوں واقف تابشؔ

کسی دیرینہ شناسا کی طرح

تابش دہلوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(538) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Tabish Dehlvi, Toot Kar Ehad Tamana Ki Terhan in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 30 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Tabish Dehlvi.