MENU Open Sub Menu

EK AOR DECEMBER GUZAR JAAIY GAA

اِک اور دسمبر گزر جائیگا

پھر دسمبر گزر گیا

پھر ہاتھوں کی ریکھاؤں میں

اک اور لکیر سج گئی

پھر اک شام اذیت اوڑھے

دھندلی رنگت آسمان پہ سجائے

کسی بے بس کا تاریک مقدر بن گئی

شگوفوں نے برف کی چادر پہنی

خزاں ان کاثمر بن گئی

خوابوں نے کُہر تہہ در تہہ لپیٹی

روح کی تھکن کچھ اور بڑھ گئی

تیری یادوں کے سرد صحرا کو تھامے

اِک اور شام دھند بن گئی

پھر شام و سحر کا معمول آنکھ کی نمی بن گئی

پھر اک اور برس کتنے پھول سمیٹے

زرد رت میں بدل جائیگا

پھر دسمبر کتنی صدیاں اپنے دامن میں

اک قصہ نا تمام کی صورت لپیٹے

گزرنے لگا ہے ، سو گزر جائیگا

ہاں پھر اک اور

دسمبر گزر جائیگا

ڈاکٹرنجمہ شاہین کھوسہ

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(245) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Dr Najma Shaheen Khosa, EK AOR DECEMBER GUZAR JAAIY GAA in Urdu. Also there are 24 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Dr Najma Shaheen Khosa.