GHAZAL

پسِ اِسرار کُچھ تو ہے

مرا اقرار کچھ تو ہے

ترا انکار کچھ تو ہے

جو ہے ہر ذہن پہ طاری

پسِ اِسرار کُچھ تو ہے

نظر محجوب ہے لیکن

پسِ دیوار کُچھ تو ہے

کہاں ڈوبا ہے پھر سورج

اُفق کے پار کُچھ تو ہے

بدن کیوں چھوڑتی ہے روح

بدن کے پار کچھ تو ہے

اندھیراکیوں ہے قسمت میں

یہ شب آثارکچھ تو ہے

روبینہ نازلی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(507) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of RUBINA NAZLEE, GHAZAL in Urdu. Also there are 11 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of RUBINA NAZLEE.