Mahman

مہمان

(شوہر)۔۔ اِس سے پہلے کہ وہ یہاں آئیں

چاہیے ہم کو، ہم وہاں جائیں

کتنی مہنگائی ہے پتہ ہے تمھیں

چلو کھانا ہی تھوڑا کھا آئیں

آج چُھٹّی کا دِن ہے بیگم جی

آؤ چُھٹّی کہیں منا آئیں

(بیگم)۔۔۔ اِتنی گرمی میں ہم کہاں جائیں

کرو آرام ،چین کچھ پائیں

(شوہر)۔۔ کوئی آئے تو کہنا گھر پہ نہیں

وہ گئے ہیں ابھی ابھی تو کہیں

تھوڑی چائے انھیں پِلا دینا

سادہ پانی پہ ہی بھگا دینا

(بیگم)۔۔ چائے پانی میں کر نہیں سکتی

یوں ہی بے موت مر نہیں سکتی

اور بھی کام ہیں جی کرنے کو

ہانڈی چولھے پہ سواد دھرنے کو

(شوہر)۔۔۔ کوئی تالہ ہی ڈال دو در پہ

وہ یہ سمجھیں گے ہم نہیں گھر پہ

(بیگم)۔۔۔ آئیڈیا یہ بہت ہی اچّھا ہے

تالہ ڈھونڈو کہاں پہ رکھا ہے

روبینہ نازلی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(600) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of RUBINA NAZLEE, Mahman in Urdu. Also there are 11 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of RUBINA NAZLEE.