بند کریں
شاعری احمد کامران

تُو زیادہ میں سے باہر نہیں آیا کرتا

-

too ziaada me se bahar nahi aaya karta


(24) ووٹ وصول ہوئے