Phir Aya Jam Bakaf Gulazar Ee Waiz

پھر آیا جام بکف گلعذار اے واعظ

پھر آیا جام بکف گلعذار اے واعظ

شکست توبہ کی پھر ہے بہار اے واعظ

نہ جان مجھ کو تو مختار سخت ہوں مجبور

نہیں ہے دل پہ مرا اختیار اے واعظ

انار خلد کو تو رکھ کے ہیں پسند ہمیں

کچیں وہ یار کی رشک انار اے واعظ

اسی کی کاکل پر پیچ کی قسم ہے مجھے

کہ تیرے وعظ ہیں سب پیچ دار اے واعظ

ہمارے درد کو کیا جانے تو کہ تجھ کو ہے

نہ درد یار نہ درد دیار اے واعظ

کیا جو ذکر قیامت یہ کیا قیامت کی

کہ یاد آیا مجھے قد یار اے واعظ

بھلائے گا نہ کبھی یاد گل رخاں احساںؔ

کوئی وہ سمجھے ہے سمجھا ہزار اے واعظ

عبدالرحمان احسان دہلوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(285) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abdul Rahman Ehsan Dehlvi, Phir Aya Jam Bakaf Gulazar Ee Waiz in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 39 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abdul Rahman Ehsan Dehlvi.