Ager Tum Dil Ki Baat Sun Sakte

اگر تم دل کی بات سن سکتے

اگر تم دل کی بات سن سکتے

تو تمھاری آنکھوں میں اجالا

اور ماتھے پر چاند ہوتا

بالوں میں در در کی خاک کی بجاۓ

سوالات کی گرہیں ہوتیں

اپنی مرضی کی راتوں سے گزرتے

اور مانوس صبحوں میں آنکھ کھولتے

خوابوں کو لباس کرتے

اور کسی کو بے آرام کیے بغیر

بستیوں سے گزرتے

اپنے پاؤں کے چکر کو

ٹھوکر میں تبدیل نہ ہونے دیتے

اوک سے پانی پیتے

اور کسی بھی در پر پڑے رہتے

موت کی سمفنی کو یاد رکھتے ہوئے

محبت کی گلیوں میں صدا لگاتے

اگر تم دل کی بات سن سکتے

تو لوگوں کی انگارہ آنکھوں سے گزر کر

اسے سینے سے لگا لیتے

اس کے زخموں کو

اپنے آنسوؤں سے مندمل کرتے

وہ --- جس نے

تمھارے نام کا ورد کرتے ہوے

دنیا سے ملامت پائی

اور اپنوں سے پتھر کھائے

عمر بھر مڑ مڑ کر ...اس جانب دیکھا

جہاں تم کبھی موجود نہ رہ سکے

اگر تم دل کی بات سن سکتے

تو شاید کچھ لا فانی لفظ لکھ جاتے

کتابوں کے ڈھیر پر کھڑے ہو کر

آسمان کو ہاتھ لگاتے

دیواروں کی بجائے ، زمین

اور چیزوں کی بجائے ، زندگی سے جڑے ہوتے

تمھاری مٹی خراب نہ ہوتی

تمھارے جسم پر اپنے زخم ہوتے

اور کاندھوں پر ، اپنی صلیب

آج تمھارے دل میں

اس قدر ڈر نہ ہوتا

تم --- بے ریا جیتے

اور بے نیازی سے مر سکتے !

ابراراحمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(392) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abrar Ahmad, Ager Tum Dil Ki Baat Sun Sakte in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 93 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abrar Ahmad.