Dhoop Chamki Raat Ki Tasveer Peeli Ho Gayi

دھوپ چمکی رات کی تصویر پیلی ہو گئی

دھوپ چمکی رات کی تصویر پیلی ہو گئی

دن گیا اور سرد تاریکی نکیلی ہو گئی

جانے کس کی جستجو میں اس قدر گھوما کئے

ہم جواں مردوں کی ہر پوشاک ڈھیلی ہو گئی

مے کدہ سے گھر کی جانب خود بہ خود کیوں آ گئے

سرد کمرے کی فضا کیا پھر نشیلی ہو گئی

ہم سرابوں کے سفر کے اس قدر عادی ہوئے

جل بھری ندیوں کی لذت بھی کسیلی ہو گئی

خوش نما دیوار و در کے خواب ہی دیکھا کئے

جسم صحرا ذہن ویراں آنکھ گیلی ہو گئی

ابرار عظمی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(846) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abrar Azmi, Dhoop Chamki Raat Ki Tasveer Peeli Ho Gayi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 9 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abrar Azmi.