Kamre Main Dhua Dard Ki Pehchaan Bana Tha

کمرے میں دھواں درد کی پہچان بنا تھا

کمرے میں دھواں درد کی پہچان بنا تھا

کل رات کوئی پھر مرا مہمان بنا تھا

بستر میں چلی آئیں مچلتی ہوئی کرنیں

آغوش میں تکیہ تھا سو انجان بنا تھا

وہ میں تھا مرا سایہ تھا یا سائے کا سایہ

آئینہ مقابل تھا میں حیران بنا تھا

نظروں سے چراتا رہا جسموں کی حلاوت

سنتے ہیں کوئی صاحب ایمان بنا تھا

ندی میں چھپا چاند تھا ساحل پہ خموشی

ہر رنگ لہو رنگ کا زندان بنا تھا

حرفوں کا بنا تھا کہ معانی کا خزینہ

ہر شعر مرا بحث کا عنوان بنا تھا

ابرار عظمی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2053) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abrar Azmi, Kamre Main Dhua Dard Ki Pehchaan Bana Tha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 9 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abrar Azmi.