Main Rang Asmaan Kar K Sunehri Chor Deta HooN

میں رنگ آسماں کر کے سنہری چھوڑ دیتا ہوں

میں رنگ آسماں کر کے سنہری چھوڑ دیتا ہوں

وطن کی خاک لے کر ایک مٹھی چھوڑ دیتا ہوں

یہ کیا کم ہے کہ حق خود پرستی چھوڑ دیتا ہوں

تمہارا نام آتا ہے تو کرسی چھوڑ دیتا ہوں

میں روز جشن کی تفصیل لکھ کر رکھ تو لیتا ہوں

مگر اس جشن کی تاریخ خالی چھوڑ دیتا ہوں

بہت مشکل ہے مجھ سے مے پرستی کیسے چھوٹے گی

مگر ہاں آج سے فرقہ پرستی چھوڑ دیتا ہوں

خود اپنے ہاتھ سے رسم وداعی کر تو دی پر اب

کوئی بارات آتی ہے تو بستی چھوڑ دیتا ہوں

تمہارے وصل کا جس دن کوئی امکان ہوتا ہے

میں اس دن روزہ رکھتا ہوں برائی چھوڑ دیتا ہوں

حکومت مل گئی تو ان کا کوچہ چھوٹ جائے گا

اسی نقطے پہ آ کر بادشاہی چھوڑ دیتا ہوں

مبارک ہو تجھے صد آفریں اے شان محرومی

ترے پہلو میں آ کے گھر گرہستی چھوڑ دیتا ہوں

احمد کمال پروازی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2957) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmad Kamal Parwazi, Main Rang Asmaan Kar K Sunehri Chor Deta HooN in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Birthday Urdu Poetry. Also there are 20 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Birthday poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmad Kamal Parwazi.