Nahi Asmaan Teri Chaal Main Nahi Aoon Ga

نہیں آسماں تری چال میں نہیں آؤں گا

نہیں آسماں تری چال میں نہیں آؤں گا

میں پلٹ کے اب کسی حال میں نہیں آؤں گا

مری ابتدا مری انتہا کہیں اور ہے

میں شمارۂ مہ و سال میں نہیں آؤں گا

ابھی اک عذاب سے ہے سفر اک عذاب تک

ابھی رنگ شام زوال میں نہیں آؤں گا

وہی حالتیں وہی صورتیں ہیں نگاہ میں

کسی اور صورت حال میں نہیں آؤں گا

مجھے قید کرنے کی زحمتیں نہ اٹھائیے

نہیں آؤں گا کسی جال میں نہیں آؤں گا

میں خیال و خواب حصار سے بھی نکل چکا

سو کسی کے خواب و خیال میں نہیں آؤں گا

نہ ہو بدگماں مری داد خواہی ہجر سے

مری جاں میں شوق وصال میں نہیں آؤں گا

احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(451) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmad Mahfuz, Nahi Asmaan Teri Chaal Main Nahi Aoon Ga in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 25 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmad Mahfuz.