Woh Zamana Hai Ke Ab Koch Nahi Deewany Main

وہ زمانہ ہے کہ اب کچھ نہیں دیوانے میں

وہ زمانہ ہے کہ اب کچھ نہیں دیوانے میں

نام لیتا ہے جنوں کا کبھی انجانے میں

قسمت اپنی ہے کہ ہم نوحہ گری کرتے ہوئے

کریں زنجیر زنی دل کے عزا خانے میں

کیا ہوئے لوگ پرانے جنہیں دیکھا بھی نہیں

اے زمانے ہمیں تاخیر ہوئی آنے میں

ان شکستہ در و دیوار کی صورت ہم بھی

بہت آسیب زدہ ہوں گے نظر آنے میں

اپنے آبائی مکانوں سے پلٹتے ہوئے ہم

کتنے نازاں ہیں کوئی دن رہے ویرانے میں

ہم تو کچھ اور طرح ہوتے تھے برباد عطاؔ

اب تو کچھ اور سے حالات ہیں مے خانے میں

احمد عطا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1172) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmed Atta, Woh Zamana Hai Ke Ab Koch Nahi Deewany Main in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmed Atta.