Ne Mohra Baqi Ney Mohra Bazi

نے مہرہ باقی نے مہرہ بازی

نے مہرہ باقی نے مہرہ بازی

جیتا ہے رومیؔ ہارا ہے رازیؔ

روشن ہے جام جمشید اب تک

شاہی نہیں ہے بہ شیشہ بازی

دل ہے مسلماں میرا نہ تیرا

تو بھی نمازی میں بھی نمازی

میں جانتا ہوں انجام اس کا

جس معرکے میں ملا ہوں غازی

ترکی بھی شیریں تازی بھی شیریں

حرف محبت ترکی نہ تازی

آزر کا پیشہ خارا تراشی

کار خلیلاں خارا گدازی

تو زندگی ہے پایندگی ہے

باقی ہے جو کچھ سب خاک بازی

علامہ اقبال

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2410) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Allama Iqbal, Ne Mohra Baqi Ney Mohra Bazi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 83 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Allama Iqbal.